مرکزی صفحہ » عصرِحاضر کی تحریکیں » القاعدہ » علامہ امام شیخ عبد العزیز بن باز (رحمہ اللہ) کی اسامہ بن لادن کو نصیحت​

علامہ امام شیخ عبد العزیز بن باز (رحمہ اللہ) کی اسامہ بن لادن کو نصیحت​

image_pdfimage_print
اسامہ-کو-نصیحٹ
رئیس المفتیاسامہ کو نصیحٹشیخ عبد العزیز بن باز (رحمہ اللہ)

کی اسامہ بن لادن کو نصیحت​

آجکل جو گمراہ کن اور فساد سے بھر پور دعوت محمد المسعری ، سعد الفقیہ اور ان جیسے دیگر افراد پھیلا رہے ہیں بلاشبہ یہ ایک بہت بڑا شر ہے ، اور یہ افراد اس شر عظیم اور بڑے فساد کے داعی ہیں۔ پس ہم پر واجب ہےکہ ان کے لٹریچر سے لوگوں کو خبردار کریں اور ان کا قلع قمع کرکے انہیں تلف کردیا جائے۔ اور ان کی شروفساد پر مبنی باطل وپرفتن دعوت کے سلسلے میں ان سے عدم تعاون(بائیکاٹ) کیا جائے۔ کیونکہ اللہ تعالیٰ نے نیکی اور بھلائی کے کاموں میں تعاون کا حکم دیا ہے نہ کہ شروفساد جھوٹ اور باطل نظریات کی نشرواشاعت کے کاموں میں کہ جو فرقہ واریت اور امن وامان کی صورتحال میں خلل کا سبب بنتے ہیں۔

یہ نشریات جو باطل پرست اور شروتفرقہ بازداعیان سعد الفقیہ اور محمد المسعری وغیرہ سے صادر ہوئیں ہیں ان کا قلع قمع کرکے انہیں تلف کردینا چاہیے ، اور ان کی جانب بالکل بھی التفات نہیں کرنا چاہیے۔ ساتھ ہی ساتھ انہیں نصیحت کرنا اور حق کی جانب رہنمائی کرکے ان باطل نظریات سے خبردار بھی کرنا چاہیے۔ کسی کے لئے یہ قطعاً جائز نہیں کہ وہ اس شر کی ترویج میں ان کے ساتھ تعاون کرے، پس انہیں بھی نصیحت قبول کرکے راہ ہدایت کی طرف رجوع کرلینا چاہیے، اور اس باطل (نظریہ کو اپنے ذہن سے) نکال پھینک کر اسے ترک کردینا چاہیے۔

قُلْ يٰعِبَادِيَ الَّذِيْنَ اَسْرَفُوْا عَلٰۤى اَنْفُسِهِمْ لَا تَقْنَطُوْا مِنْ رَّحْمَةِ اللّٰهِ١ؕ اِنَّ اللّٰهَ يَغْفِرُ الذُّنُوْبَ جَمِيْعًا١ؕ اِنَّهٗ هُوَ الْغَفُوْرُ الرَّحِيْمُ،وَ اَنِيْبُوْۤا اِلٰى رَبِّكُمْ وَ اَسْلِمُوْا لَهٗ مِنْ قَبْلِ اَنْ يَّاْتِيَكُمُ الْعَذَابُ ثُمَّ لَا تُنْصَرُوْنَ۔

(الزمر:53-54)

(اے نبی(ﷺ) آپ میرے ان بندوں سے کہہ دیجئے کہ جنہوں نے اپنے نفسوں پر (گناہ کر کرکے) ذیادتی کہ اللہ تعالیٰ کی رحمت سے ناامید نہ ہوں بیشک اللہ تعالیٰ تو تمام گناہوں کو بخش دیتا ہے بیشک وہ ہے ہی بہت مغفرت کرنے والا اور رحم کرنے والا۔ اور تم (سب) اپنے رب کی طرف جھک پڑو اور اس کی حکم برداری کئے جاؤ اس سے قبل کہ تمہارے پاس عذاب آجائے اور پھر تمہاری مدد نہ کی جائے)

اور اللہ تعالیٰ فرماتا ہےکہ:
وَ تُوْبُوْۤا اِلَى اللّٰهِ جَمِيْعًا اَيُّهَ الْمُؤْمِنُوْنَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُوْنَ ۔

(النور:31)

(اے مسلمانو! تم سب کے سب اللہ کی جانب میں توبہ کروتا کہ تم نجات پاؤ)

اور اس معنی کے بہت سی آیات ہیں۔
ایک دوسرے مقام پر آپ(رحمۃ اللہ علیہ) نے یہ بھی فرمایا کہ:

“أن أسامۃ بن لادن من المفسدین فی الأرض، ویتحری طرق الشر الفاسدۃ وخرج عن طاعۃ ولی الأمر”  

(جریدۃ المسلمون والشرق الأوسط۔۹ جمادی الأولیٰ ۱۴۱۷ھ)

(بیشک اسامہ بن لادن زمین میں فساد مچانے والوں میں سے ہے اور شتر بے مہار کی مانند طریقہ شروفساد پرگامزن ہے اور ولی الامر (حکومت) کی اطاعت سے خارج ہو چکا ہے)۔

شیخ‌بن باز رحمہ اللہ کا کلام سننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

Print Friendly

About alfitan

مزید دیکھئے

حب الوطنی کے ردمیں غلو:

بسم اللہ الرحمان الرحیم الحمدللہ والصلوۃ والسلام علی رسول اللہ وبعد! کچھ لوگ تقوی اختیار …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *